بزدار حکومت نے نہیں والدہ کا وظیفہ شہباز شریف کے دور میں بند ہوگیا تھا- طاہرہ جالب

0
748

بائیں بازو کے انقلابی شاعر حبیب جالب کی بیٹی نے میڈیا کو بتایا  ہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے ان کی والدہ بیوہ حبیب جالب کو جاری ہونے والا 25 ہزار وپے ماہانہ کا وظیفہ کی منظوری ہونے کے تھوڑے عرصے بعد ان کی والدہ فوت ہوگئیں تھیں اور یہ وظیفہ شہباز حکومت کے دور میں 2014ء میں بند ہوگیا تھا۔ کیونکہ پنجاب حکومت کی رو سے یہ وظیفہ صرف شاعروں اور ادیبوں کی بیواؤں کو دیا جاسکتا ہے۔

طاہرہ جالب کے اس بیان نے سوشل میڈیا پہ پیدا ہونے والے اس تنازعے کا ڈراپ سین ہوگیا ہے جو مسلم لیگ نواز کے حامی میڈیا گروپوں اور لبرل لیفٹ حلقوں کی طرف سے اس الزام کے بعد اٹھا تھا کہ حبیب جالب کی بیٹی طاہرہ جالب وظیفہ کے بعد ہونے کی وجہ سے ٹیکسی چلانے پہ مجبور ہوئی ہیں۔

طاہرہ جالب کی وضاحت نے ایک بار پھر یہ واضح کیا ہے کہ پاکستان میں لبرل اور لیفٹ اقدار و خیالات کے نام پہ ایک گروہ نواز لیگ –تحریک انصاف کی دو طرفہ فیک نیوز چلاؤ مہم کا حصّہ بنا ہوا ہے اور وہ پی ٹی آئی کی حکومت کے خلاف منفی تاثر پیدا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ یہ کوشش اس ملک کے محنت کش طبقات کے مفادات کے لیے نہیں بلکہ سلطنت شریفیہ کی رہی سہی بادشاہت کو باقی رکھنے کی کوششوں کا حصّہ ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here